کراچی میں بلوچ طلبہ کی رہائی کے لیے احتجاج کرنے والے لواحقین پر پولیس نے دھاوا بول دیا

ابھی کچھ دیر پہلے کراچی پریس کلب کے سامنے بلوچ طلبہ کی بازیابی کے لیے احتجاج کرنے والے لواحقین پر پولیس کی جانب سے تشدد اور گرفتاریاں کی گئی ہیں۔

کراچی یونیورسٹی کے بلوچ طلبہ کی جبری گمشدگی: کراچی پریس کلب کے سامنے احتجاجی کیمپ قائم

مورخہ 7 جون بروز بدھ کو کراچی یونیورسٹی کے دو بلوچ طالب علم دودا بلوچ اور گمشاد بلوچ کو جبری طور پہ گمشدہ کردیا گیاتھا۔جس کو لے کر آج کراچی پریس کلب کے سامنے انکے لواحقین اور طلبہ تنظیموں کی جانب سے احتجاجی کیمپ قائم کیا گیاہے۔